New to Busy?

How a dr tried to kill me with overdose

10 comments

healthexpert
67
last monthSteemit2 min read


جب آپ کسی ہسپتال میں ایمرجنسی کی صورت جاتے ہیں یہ اپنے بچوں کو لے کر جاتے ہیں تو بعض انجکشن خاص طور پر ڈرپ کے زریعے لگائے جاتے
ہیں اگر ان کو ڈائیرکٹ لگا دیا جائے تو موت واقع ہو سکتی ہے ، ہوتا اصل میں یہ ہے کہ ڈاکٹر وقت بچانے کے غرض سے یہ بستر کی کمی کہ وجہ سے مریض کو لوٹنے کا موقع نہیں جانے دیتا اور انجکشن بنا ڈرپ کے لگا دیتا ہے اس کا ریکشن جان لیوا ہے میرے ساتھ ایسا ہوا ہے میں ایک سرکاری ہسپتال چلاگیا ایمرجنسی میں بیڈ نہیں تھا ہسپتال والوں نے مجھے رائزک اور گریوینیٹ کا انجکشن ڈائیریکٹ لگا دیا میں انجکشن لگا کر چلنا شروع کیا اچانک میرا دماغ کام کرنا بند ہو گیا اور میں زمیں پر گر پڑا پھر خوش آیا مگر میرا پورا دماغ شدید ٹھنڈا پڑ چکا تھا ،ابھی بھی اس کے سائیڈ ایفکٹ ختم نہیں ہوئے اور مجھے اکثر چکر آتے ہیں ، اللہ نے بچا لیا لیکن ہسپتال والوں نے مارنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی تھی ، اس لیے جب بھی کسی ہسپتال جائیں تو انجکشن ڈایرکٹ مت لگوائیں کراچی میں ایک بچی کی موت واقع ہو گئی ہے پاکستان کے ڈاکڑ پیسے کے پجاری خرامی ہیں
When ever you go to hospital and dr recommend injection never inject them directly first google it some injection not to be injected directly , can lead to comma heart attack and even sudden death This happen to me my stomach waas upset and vomiting all night the doctor then without drip emergency inject me and over dose my brain stop workig i fall on road while driving and my brain feel like very cold Thanks god i survived through this accident so please guys be careful in your life always google the medicine name and how to use it before being injected by drs.
Doctors specially belong to developing countries are greedy and they put experiment on patients and never care about result some are just students and newbies .

Comments

Sort byBest